Western Freedom of Expression

Spread the love

Western Freedom of Expression

The argument of the West is that freedom of expression is the basic right of every person. Therefore, we have the right attitude and the wrong attitude of the Muslims themselves, who cannot tolerate dissent. Obviously, their position is based solely on hard work, and scholars around the world know and believe that freedom, like other ideas, is never infinite, but is always surrounded by certain questions and exceptions. Occurs in other fields and from traffic laws to legislation to important issues in Parliament, we all witness everyday).So how can a man be given the freedom of expression that can hurt the hearts of millions and hurt them? Therefore, the concept of limited and materialistic freedom of the West is rational and logically irrational, and it is not a Janine right to be supported.

اہل مغرب کی دلیل یہ ہے کہ آزادیٔ اظہار رائے ہر آدمی کا بنیادی حق ہے۔ لہٰذا ہمارا رویہ تو صحیح ہے اور غلط رویہ خود مسلمانوں کا ہے جو اختلاف رائے کو برداشت نہیں کرسکتے۔ ظاہر ہے ان کا یہ موقف محض کٹ جحتی پر مبنی ہے اور دنیابھر کے اہل علم و عقل جانتے اور مانتے ہیں کہ دوسرے تصورات کی طرح آزادی بھی کبھی لامحدود نہیں ہوتی بلکہ ہمیشہ بعض قیود و استثناء ات سے گھری ہوتی ہے(جیسا کہ زندگی کے دوسرے شعبوں میں ہوتا ہے اور ٹریفک قوانین سے لے کر پارلیمنٹ میں اہم امور میں قانون سازی تک ہم سب کا روزمرہ کا مشاہدہ ہے) لہٰذا ایک آدمی کو ایسے اظہار کی آزادی کیسے دی جا سکتی ہے جس سے کروڑوں لوگوں کے دل دکھیں اور انہیں تکلیف پہنچے۔ لہٰذااہل مغرب کالا محدود اور مادر پدر آزادی کا تصور عقلی و منطقی لحاظ سے بھی غیر معقول ہے اور یہ کوئی جینوئن حق نہیں جس کی حمایت کی جائے۔

Leave a comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *